24

پُراسرار رکشہ ڈرائیور، نشہ آور جوس پلا کر لوٹنے لگا

بہاولپور (اُمیدیں ٹائمز) بہاولپور پولیس کو پراسرار رکشہ ڈرائیور کی تلاش۔ تفصیل کے مطابق کرناں بستی محلہ نشاط کالونی بہاولپور کے رہائشی محمد اکبر نے بتایا کہ 12جولائی 2020 کو صبح دس بجے میری والدہ شادی کے سلسلہ میں بستی لکھاں مسافر خانہ جانے کیلئے لاری اڈاہ پہنچی جہاں سے وہ مسافر خانہ کیلئے بسواری رکشہ روانہ ہوئی جب کافی دیر تک وہ مسافر خانہ نہ پہنچی تو ہمیں تشویش ہوئی اور انکی تلاش شروع کی جس کے دوران میری والدہ بی وی ایچ ایمرجسنی وارڈ میں بے ہوش پائی گئیں۔ ہوش آنے پر انہوں نے بتایا کہ لاری اڈہ سے رکشہ والے کے ساتھ مسافر خانہ کیلئے روانہ ہوئی اور اس رکشہ والے نے دوران سفر مجھے نشہ آور جوس پلا دیا جس سے میں بے ہوش ہو گئی اور مجھے بے ہوش کر کے طلائی زیور آدھا تولہ چوری کرلیا۔ محمد اکبر نے بتایا کہ 1122 سے پتہ کیا تو انہوں نے بتایا کہ تمہاری والدہ سرکٹ ہائوس کے سامنے بے ہوش پائی گئی تھی جہاں سے ہم نے اس کو ریسکیو کیا اور اسی جگہ سے گزشہ ایک ماہ کے دوران یہ پانچویں بزرگ خاتون ہیں جن کو ریسکیو کیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق بہاولپور میں رکشہ ڈرائیور مختلف بوڑھی خواتین کو رکشہ میں سوار کر کے ان کو نشہ آور جوس پلا کر ان کی بالیاں اور نقد رقم چھین لیتا ہے اور خواتین کو کسی بھی ویران جگہ پر پھینک کر فرار ہو جاتا ہے۔ شہریوں نے ڈی ایس پی بہاولپور سے اس پراسرار رکشہ ڈرائیور کو گرفتار کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں